ہندوستان میں یومیہ اوسطاً زیادہ سے زیادہ تعداد میں خوراک دئیے جانے کا سلسلہ جاری

Image default
Urdu News

ملک بھر میں کووڈ-19 ٹیکہ لگوانے والوں کی مجموعی تعدادآج 9.80کروڑ سے تجاوز کرگئی۔

آج صبح سات بجے تک موصول عبوری رپورٹ کے مطابق1475410 سیشنز کے ذریعے 98075160 کروڑ ویکسین کی خوراک دی جاچکی  ہے۔ ان میں سے8988373 صحت کارکنان ایچ سی ڈبلیوز کوپہلی خوراک، 5479821 صحت کارکنان کو دوسری خوراک جبکہ 9867330 صف اوّل کے اہلکاروں کوپہلی خوراک اور4659035 صفحہ اوّل کے کارکنان کو دوسری خوراک دی جاچکی ہےاور  60 سال سے زیادہ عمر والے 38653105  مستفدین پہلی خوراک  و1590388 مستفدین  دوسری خوراک حاصل کرچکے ہیں۔ 45 سے 60 سال کی عمر والے 28255044 مستفدین کو پہلی خوراک جبکہ 582064 مستفدین کو دوسری خوراک دی جاچکی ہے۔

ایچ سی ڈبلیوز

ایف ایل ڈبلیوز

45 سے 60 سال کی عمر کے افراد

60 سال سے زیادہ عمر کے افراد

میزان

پہلی خوراک

دوسری خوراک

پہلی خوراک

دوسری خوراک

پہلی خوراک

دوسری خوراک

پہلی خوراک

دوسری خوراک

89,88,373

54,79,821

98,67,330

46,59,035

2,82,55,044

5,82,064

3,86,53,105

15,90,388

9,80,75,160

ملک میں اب تک دی گئی  مجموعی خوراک میں سے 60.62 فیصد خوراک 8 ریاستوں میں دی گئی ہے۔

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image001RS7F.jpg

34 لاکھ سے زیادہ  ویکسین کی خوراک گذشتہ 24 گھنٹوں میں دی گئی ہے۔

جاری ٹیکہ کاری مہم کے 84ویں دن (9 اپریل2021) تک 3415055 ویکسین کی خوراک دی گئی۔ 46207سسیشنز  میں3006037 مستفدین  کو پہلی خوراک دی گئی اور409018 مستفدین کو ویکسین کی دوسری خوراک دی گئی۔

مورخہ  9 اپریل 2021

ایچ سی ڈبلیوز

ایف ایل ڈبلیوز

45 سے 60 سال کی عمر کے افراد

60 سال سے زیادہ عمر کے افراد

مجموعی حصولیابی

پہلی خوراک

دوسری خوراک

پہلی خوراک

دوسری خوراک

پہلی خوراک

دوسری خوراک

پہلی خوراک

دوسری خوراک

پہلی خوراک

دوسری خوراک

11,975

29,051

53,152

1,11,697

19,79,517

54,504

9,61,393

2,13,766

30,06,037

4,09,018

عالمی سطح پر یومیہ خوراک دئیے جانےکی تعداد کے معاملے میں، ہندوستان یومیہ اوسطاً 3893288 ویکسین کی خوراک دئیے جانے کے ساتھ سرفہرست بنا ہواہے۔

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image002S9WH.jpg

ہندوستان میں روزانہ نئے معاملوں میں اضافہ درج ہورہا ہے۔ گذشتہ 24 گھنٹوں میں 145384 نئے معاملے درج ہوئے ہیں۔

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image003T7V5.jpg

  مہاراشٹر، چھتیس گڑھ، اترپردیش، دہلی، کرناٹک، تمل ناڈو،  کیرالہ، مدھیہ پردیش، گجرات اور راجستھان سمیت 10 ریاستوں میں  کووڈ-19 کے معاملوں میں اضافہ نظر آرہا ہے۔ 82.82  فیصد نئے معاملے ان ہی دس ریاستوں میں درج ہوئے ہیں۔

یومیہ بنیاد پر مہاراشٹر میں سب سے زیادہ 58993 نئے معاملے درج ہوئےہیں۔ اس کے بعد چھتیس گڑھ میں 11447 ، اترپردیش میں  9587 نئے معاملے سامنے آئے ہیں۔

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image004UFR7.jpg

ہندوستان کے فعال معاملوں کی مجموعی تعداد 1046631 تک پہنچ گئی ہے۔یہ ملک میں مجموعی مثبت معاملوں کا 7.93 فیصد  کے بقدرہے۔پچھلے 24 گھنٹوں میں فعال معاملوں کی مجموعی تعداد میں سے 67023 معاملے کم ہوئے ہیں۔

ملک بھر میں مجموعی  فعال معاملوں میں سے 72.23فیصد معاملے، پانچ ریاستوں یعنی  مہاراشٹر،  چھتیس گڑھ، کرناٹک، اترپردیش اور  کیرالہ میں درج ہوئے ہیں۔  ملک بھر کےمجموعی طورپر فعال معاملوں میں سے 51.32 فیصد معاملے صرف  مہاراشٹر میں درج ہوئے ہیں۔

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image00564OJ.jpg

ملک بھر کے مجموعی معاملوں میں سے 45.62 فیصد  معاملے دس ریاستوں میں درج ہوئے ہیں

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image006TB41.jpg

ہندوستان میں صحتیاب ہونے  والے مریضوں کی کل تعداد آج 11990859ہے۔ قومی سطح پر صحتیابی کی شرح 90.80  فیصد ہے۔

 گزشتہ 24 گھنٹوں میں77567مریض صحتیاب ہوئے ہیں۔

یومیہ بنیا دپر اموات کی تعداد میں مسلسل اضافہ نظر آرہا ہے۔گذشتہ 24 گھنٹوں میں 794 اموات درج ہوئی ہیں۔

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image0087KU5.jpg

کووڈ سے ہونے  والی 86.78 فیصداموات10ریاستوں میں درج ہوئی ہیں۔ مہاراشٹر میں سب سے زیادہ اموات (301)  درج ہوئی ہیں۔ اس کے بعد چھتیس گڑھ میں91 یومیہ  اموات درج کی گئیں۔

https://static.pib.gov.in/WriteReadData/userfiles/image/image0087KU5.jpg

پچھلے 24 گھنٹوں کے دوران  12 ریاستوں/ مرکز کے زیر انتظام علاقوں میں کووڈ-19 سےموت کی کوئی بھی اطلاع نہیں ملی ہے۔ ان میں پڈوچیری، لداخ (مرکز کے زیر انتظام علاقہ)، دمن و دیو اور دادر و نگر حویلی، ناگالینڈ،  تریپورہ، میگھالیہ،سکم، میزورم، منی پور، لکش دیپ،انڈمان و نکوبار جزائر، اور اروناچل پردیش شامل ہیں۔

Related posts

چنڈی گڑھ شہر کووڈ – 19 کے خلاف لڑائی میں کچرا اکٹھا کرنے والے ڈرائیوروں کے لئے گاڑی کا پتہ لگانے والی ایپلی کیشن اور جی پی ایس والی اسمارٹ گھڑیاں استعمال کررہا ہے

مرکزی وزیر ڈاکٹر ہرش وردھن نے آیوشمان بھارت-پردھان منتری جن آروگیہ یوجنا کا جائزہ لیا اورایک سال میں ہوئی اس اسکیم کی پیش رفت کی ستائش کی

مرکزی حکومت نے ریاستوں کو تین کروڑسے زائد این 95ماسک تقسیم کرکے تاریخ رقم کی