عالمی تنظیم تجارت کے وزارتی اجلاس کی افتتاحی تقریب نئی دلی میں شروع – Online Latest News Hindi News , Bollywood News
Breaking News
Home » Urdu News » عالمی تنظیم تجارت کے وزارتی اجلاس کی افتتاحی تقریب نئی دلی میں شروع

عالمی تنظیم تجارت کے وزارتی اجلاس کی افتتاحی تقریب نئی دلی میں شروع

نئیدہلی: حکومت  ہند کے  محکمہ کامرس  کے سکریٹری  ڈاکٹر انوپ ودھاون نے     نئی دلی  میں نئی دلی  میں  منعقد ہونے  والے عالمی تنظیم تجارت  کے  اجلاس  میں  شرکت کرنے والے ترقی پذیر  اور انتہائی کم ترقی یافتہ ممالک کے   نمائندوں کا      خیر مقدم  کیا ۔دوروزسےجاری  اس  اجلاس  میں    ہمہ جہت  تجارتی نظام کو درپیش    کلیدی مسائل اور چیلنجوں    پر تبادلٔہ خیا ل کیا جائے گا ۔

          اس موقع پر اپنی  افتتاحی تقریر میں     کامرس سکریٹری  موصوف نے کہا کہ      اپیلی  اداروں     کو  ہمہ جہت  قوانین  پر مبنی   تجارتی  نظام  کو درپیش  چیلنج        دراصل  موجودہ   یکطرفہ  طریقو ں    اور اس  کے  رد  عمل میں  کئے جانے والے اقدامات  اور اہم  معاملات سے جڑے   اداروں  میں    آنے والی     رکاوٹیں  ہیں  ۔     انہوں نے کہا کہ ا پیلی اداروں   میں یہ جمود    عالمی تنظیم تجارت کے  مسائل اور اختلافات کو دور کرنے کے نظام    کے ساتھ ساتھ  عمل آوری        کے نظام کے لئے زبردست خطرے کی  حیثیت رکھتا  ہے ۔ عالمی تنظیم تجارت کے   نظام  کے  بنیادی امور    کو   پوری  دنیا کی تجارتی  فضا کوخراب کرنے والے تحفظات   سے  سخت آزمائش  در پیش ہے ۔  یہ صورتحال ترقی پذیر اور کم ترقی یافتہ  ممالک کے لئے بھی   بہتر نہیں  ہے ۔

اپیلی اداروںکی ناکامی کی وجہ سے   ہونے والی   ادارہ  جاتی ناکامی کا نقصان    ترقی یافتہ ملکوں سے کہیں زیادہ       ان  ترقی پذیر ملکو  ں  اور  کم ترقی  یافتہ ملکوں  کو پہنچ رہا ہے ،  جنہیں   اصولوں  پر مبنی نظام کے   تحفظ کی  ترقی یافتہ ملکوں سے زیادہ ضرورت  ہے ۔  اس  لئے     اشد ضرورت اس  بات کی ہے کہ   اس  نظام کے تحفظ  کے لئے تعمیری اقدامات کئے جائیں  اور مسئلے کے تعمیری حل  کے طریقے پیش  کئے جائیں   اور اس مسئلے  کا تعمیری حل فوری طور سے  پیش  کیا جائے ۔

عالمی تنظیم تجارت   میں  موجودہ  صورتحال    تنظیم میں   ان  اصلاحات کی   سخت  متقاضی   ہے جو  بدقسمتی سے   عدم تواز ن کا نتیجہ ہے ۔   اصلاحات کے جس ایجنڈے کو روبہ عمل  لایا جارہا ہے ، اس سے ترقی پذیر ممالک کےخدشات کا تدارک نہیں  ہوتا اس لئے نئی دلی میں  ہونے والے اس اجلاس  میں  اصلاحات کے ایجنڈے میں   ترقی  کو  مرکزیت دینے کے فیصلے   کی تصدیق کی جارہی ہے ۔  اصلاحات کے اقدامات     شمولیت  ہونی چاہئے اور   امتیاز وتفریق      سے بالاترہونی چاہئے  تاکہ اعتماد بحال ہوسکے  اور  موجودہ عدم مساوات کا سد باب ہوسکے ۔

مذاکرات کے ایجنڈے میں   کم ترقی یافتہ ملکوں سمیت ترقی پذیر ممالک   کے کلیدی  خدشات    پر      کوئی عملی قدم نہیں  اٹھایا گیا ۔  جبکہ  زراعت  ،عالمی تنظیم تجارت کے بیشتر    رکن ممالک کی کلیدی اولیت  کی اہمیت  رکھتی  ہے ۔تاہم      اب   ماضی   میں  کئے  گئے کاموں اور فیصلوں   کو   پوری  طرح  بے دخل کرکے  پس  منظر  میں بھیجے کا رجحان دیکھا جارہا ہے ۔

ہندوستان کا خیال ہے کہ   ترقی پذیر ممالک کو   عالمی تنظیم تجارت میں   اپنے  مفادات کی حفاظت  کے لئے  تنظیم کے بنیادی اصولوں  کے مطابق   مل جل کر   کام کرنے کی ضرورت  ہے ۔  اس  دوروزہ اجتماع   میں شریک ترقی پذیر ممالک   کو       ترقی  پذیر  ممالک کے لئے ترجیحات اور مفادات کے مسائل       پر  ایک مشترکہ  اصلاحی تجویز    سے  روبہ رو ہونے کا موقع حاصل  ہوگا جس سے  کم ترقی یافتہ  ملکوں سمیت  ترقی  پذیر ممالک کے مسائل      پر ایک   اتفاق  رائے  ہموار کرنے میں  مدد ملے گی۔

About admin