شہریوں کے قومی رجسٹر (این آر سی) میں جو لوگ اپنی شہریت ثابت کرنے سے قاصر رہے ان کے لئے ناگالینڈ میں کوئی حراستی کیمپ نہیں بنایا گیا:نتیانند رائے

Image default
Urdu News

نئی دہلی، امور داخلہ کے مرکزی وزیر مملکت جناب نتیا نند رائے نے آج راجیہ سبھا میں ناگالینڈ میں حراستی کیمپ بنائے جانےسے متعلق ایک سوال کے تحریری جواب میں بتایا کہ اس طرح کے کسی بھی کیمپ کی تعمیر نہیں کی گئی ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ اگرچہ آسام    کی ریاستی حکومت نے بنگلہ دیش سے متصل اضلاع میں این آر سی کے تحت باز آبادی کی دوبارہ تصدیق کرنے کے لئے گزارش کی تھی، تاہم سپریم کورٹ اس کے راضی نہیں ہوا۔

کوئی بھی شخص جو اندراج سے متعلق قومی شناختی کارڈ( این آر آئی سی) کے دعوؤں اور اعتراضات کے فیصلوں سے مطمئن نہیں ہے، تو وہ ریاست آسام میں این آر آئی سی جاری ہونے کی تاریخ سے لے کر 120 دنوں کے اندر غیر ملکی(ٹرائبونل)، آرڈر 1964 کے تحت قائم کردہ مقررہ غیر ملکیوں کے ٹرائبونل میں اپیل کرسکتا ہے اور ٹرائبونل کی جانب  سے اپیل کے فیصلے کے بعد ان کا نام  اہم آر آئی سی  میں شامل کیا جاسکتا ہے یا ختم کیا جاسکتا ہے، چاہے  اب معاملہ جیسا بھی ہو۔

Related posts

ریلویز کے وزیر سریش پربھاکر پربھو نے بلاس پور-منالی-لیہہ نئی براڈگیز لائن کے فائنل لوکیشن سروے کا سنگ بنیاد رکھا

راجستھان اور مدھیہ پردیش کے 15 مقامات پر آج ٹڈی کو کنٹرول کرنے سے متعلق کارروائیوں کا انعقاد

آیئے ہم باہمی اعتماد اور احترام کی بنیاد پر مل جل کر آگے بڑھیں : نائب صدر جمہوریہ