سرکاری اسپتالوں میں بدنظمی

Image default
Urdu News

نئی دہلی، صحت و کنبہ بہبود کے وزیر مملکت جناب اشونیکمار چوبے نے  اپنے ایک تحریری جواب میں آج  لوک سبھا کو بتایا کہ   جہاں تک  مرکزی حکومت کے اسپتال یعنی صفدر جنگ اسپتال، ڈاکٹر رام منوہر لوہیا اسپتال اور لیڈی ہارڈنگ   میڈیکل کالج   اور متعلقہ اسپتال کا تعلق ہے تو   یہ اسپتال   جنرل مالی ضابطہ  (جی ایف آر) 2017  اور حکومت ہند کے رہنما خطوط  کے مطابق   کھلے ٹینڈر کے ذریعہ ادوایہ اور آلات کی خریداری کرتے ہیں۔

  جہاں تک  تین سرکاری اسپتالوں یعنی   صفدر جنگ اسپتال، ڈاکٹر رام منوہر لوہیا اسپتال اور لیڈی ہارڈنگ   میڈیکل کالج   اور متعلقہ اسپتال کا تعلق ہے تو   ان اسپتالوں میں   بدنظمی  اورناقص معیار کی   ادویہ،  انجکشن  اور کنولاس   کی زیادہ شرح پر خریداری   کے   قائم شدہ طریقہ  کار اور رہنما خطوط کی خلاف ورزی  سے متعلق کوئی رپورٹ نہیں ہے۔

تاہم   ان اسپتالوں میں بدعنوانی   کی حوصلہ شکنی کے لئے     درج ذیل احتیاطی اقدامات کئے گئے ہیں:

1۔ خریداری ، جی آر ایف کے مطابق کی جاتی ہے۔

2۔متعلقہ اسپتال  کی تشکیل کردہ  کمیٹی کے ذریعہ    آنے والی اشیا کی جانچ کی جاتی ہے۔

3۔ادویہ  کی تجربہ گاہ سے متعلق رپورٹ پابندی کی  بنیاد پر  لی جاتی ہیں۔

Related posts

ڈاکٹرہرش وردھن نے وزارت صحت کے ذریعہ شروع کئے گئے ٹیلی ۔ میڈی سین پلیٹ ای سنجیونی کو مقبول بنانے میں ریاستوں کے تعاون کی سراہناکی

’حکومت خواتین کے خلاف سائبر جرم کی اطلاع دینے کے لیے سائبر جرم رپورٹنگ پورٹل تیار کرے گی : مرکزی وزیر داخلہ

مرکزی وزیرڈاکٹر جتندر سنگھ نے کورونا کے بہتر انتظام کے لئے شمال مشرقی ریاستوں کے کردار کے ستائش کی